उर्दू खबर (اردو خبر) 

حل گئے چوٹی کاٹنے کے دو کیس، جو سچ سامنے آیا اس نے پولیس کو بھی چونکایا

 

راجدھانی دہلی اور دیگر ریاستوں میں خواتین کی چوٹی کٹنے کا سلسلہ جاری ہے. ساتھ میں افواہوں بھی جم کر پھیل رہی ہیں. اسی درمیان دللي اور فرید آباد کی ایک ایک واقعات کے سلجھنے کی بات سامنے آئی ہے جس میں کافی چونکانے والے ہیں.
امبیڈکر نگر میں دو معمولی بھائیوں نے ہی اپنی بہن کی چوٹی کاٹ کر پولیس کو فون کر سنسنی پھیلانے کی کوشش کی.

 

پھتےهپربےري تھانہ علاقے میں بھی بزرگ عورت کی چوٹی کٹنے کا معاملہ سامنے آیا ہے. جنوبی دہلی کے بھی کئی علاقوں سے چوٹی کٹنے کی اطلاعات آ رہی ہیں، مگر پولیس کے پاس کسی طرح کی شکایت نہیں پہنچیں.
سختی سے پوچھ گچھ پر کیا ظاہر امبیڈکر نگر میں یہ واقعہ سنجے کیمپ، جھگی بستی ہے. پولیس کو جمعہ کی دوپہر تقریبا سوا بارہ بجے اطلاع ملی کہ ان کی بہن کی کسی نے چوٹی کاٹ دی ہے. اطلاع کے بعد پولیس فوری طور پر موقع پر پہنچی. جانچ میں پتہ لگا کہ 14 سالہ لڑکی کے بال کٹے ہیں. پولیس نے جب لڑکی کے دو معمولی بھائیوں سے سختی سے پوچھ گچھ کی، تو انہوں نے تسلیم کیا کہ دونوں نے ہی بہن کے سر منڈوا ہیں. جنوب مشرقی ضلع ڈپٹی کمشنر روئیں بانيا کا کہنا ہے کہ مذاق کرنے کے لئے بچوں نے ایسا کیا تھا. اہل خانہ نے مذاق کرنے کی بات لکھا میں دی ہے.

ایئر فورس روڈ پر عورت کی چوٹی کٹی فرید آباد کے ایئر فورس روڈ، اگروال ہسپتال کے سامنے رہنے والے پرمود کی بیوی پارو جمعہ کی شام باورچی خانے میں کھانا بنانے کی تیاری کر رہی تھیں. اچانک انہیں پیٹھ پر کچھ چوٹ جیسی محسوس ہوئی. ان کے مطابق انہوں نے ایک پرندہ دیکھا اور اس کے بعد انہیں ہوش نہیں رہا. پرمود کے مطابق وہ باورچی خانے پہنچے تو پارو کے کٹے ہوئے بال زمین پر پڑے ہوئے تھے. ڈھائی گھنٹے کے بعد پارو کو ہوش آیا.
اس ایونٹ کی معلومات کی اطلاع پر پولیس موقع پر پہنچی اور چھان بین کی. اس دوران ایک کینچی برآمد کی گئی. عورت سے پوچھنے پر اس نے اعتراف کیا کہ اس نے خود چوٹی کاٹی ہے. اگرچہ پولیس نے دیر رات تک اس معاملے میں کوئی کارروائی نہیں کی تھی. ادھر، گرگرام، فرید آباد میں 11 کیس سامنے آئے ہیں. گرگرام میں جمعہ کو سات خواتین کی چوٹی کٹنے کا معاملہ سامنے آیا ہے.

 

Related News

Leave a Comment